کتنا عجیب ہے ان کا اندازمحبت

کتنا عجیب ہے ان کا اندازمحبت
روز رولا کے کہتے ہیں………اپنا خیال رکھنا


بہت ناز تھا مجھے اپنے چاہنے والوں پر
میں عزیز تھا سب کو’مگر ضرورتوں کے لئے


دامن چھوڑ کر میرا اگر جانا ہی تھا
تو نطریں ملا کر پیار سے دیکھا کیوں تھا


اک تمنا تھی جو آج آروز بن گئی
کبھی دوستی آج محبت بن گئی
کچھ اس طرح شامل ہوئے آپ زندگی میں
کہ آپ کو سوچتے رہنا ہماری عادت بن گئی


کاش کہ عید کے ان حسیں لمحوں میں
میری زات گمشدہ تجھے یاد آئے